Knowledge gives life to the soul - Imam Ali
Dec, 11 201722 Rabi Al Awwal 1439

Dua'a E Kumayl دعائے کمیل بن زیاد
اللّهُمَّ إِنِّي‌ أَسْأَلُكَ بِرَحْمَتِكَ الَّتي‌ وَسِعَتْ كُلَّ شَيْءٍ وَبِقُوَّتِكَ الَّتي‌ قَهَرْتَ بِها كُلَّ شَيْءٍ وَخَضَعَ لَها كُلُّ شَيْءٍ وَذَلَّ لَها كُلُّ شَيْءٍ وَبِجَبَرُوتِكَ الَّتي‌ غَلَبتَ بِها كُلَّ شَيْءٍ وَبِعِزَّتِكَ الَّتي‌ لا يَقُومُ لَها شَيْءٌ وَبِعَظَمَتِكَ الَّتي‌ مَلأََتْ كُلَّ شَيْءٍ وَبِسُلْطانِكَ الَّذي‌ عَلا كُلَّ شَيْءٍ وَبِوَجْهِكَ الباقِي‌ بعْدَ فَناءِ كُلِّ شَيْءٍ وَبِأَسْمائِكَ الَّتي‌ مَلأََتْ أَرْكانَ كُلِّ شَيْءٍ وَبِعِلْمِكَ الَّذي‌ أَحاطَ بِكُلِّ شَيْءٍ وَبِنُورِ وَجْهِكِ الَّذي‌ أَضاءَ لَهُ كُلُّ شَيْءٍ يا نُورُ يا قُدُّوسُ يا أَوَّلَ الأَوَّلينَ وَيا آخِرَ الآخِرينَ اللّهُمَّ اغْفِرْ لي‌َ الذِّنُوبَ الَّتي‌ تَهْتِكُ العِصَمَ اللّهُمَّ اغْفِرْ لي‌َ الذِّنُوبَ الَّتي‌ تُنْزِلُ النِّقَمَ اللّهُمَّ اغْفِرْ لي‌َ الذِّنُوبَ الَّتي‌ تُغَيِّرُ النِّعَمَ اللّهُمَّ اغْفِرْ لي‌َ الذِّنُوبَ الَّتي‌ تَحْبِسُ الدُّعاءَ اللّهُمَّ اغْفِرْ لي‌َ الذِّنُوبَ الَّتي‌ تُنْزِلُ البَلاءَ اللّهُمَّ اغْفِرْ لي‌َ الذِّنُوبَ الَّتي‌ تَقْطَعُ الرَّجاءَ اللّهُمَّ اغْفِرْ لِي‌َ كُلَّ ذَنْبٍ أَذنَبْتُهُ وَكُلَّ خَطيئَةٍ أَخْطَأْتُها اللّهُمَّ إِنِّي‌ أَتَقَرَّبُ إِلَيْكَ بِذِكْرِكَ وَأَسْتَشْفِعُ بِكَ إِلى نَفْسِكَ وَأَسْأَلُكَ بِجُودِكَ وَكَرَمِكَ أَنْ تُدْنِيَني‌ مِن‌ قُرْبِكَ وَأَنْ تُوزِعَني‌ شُكْرَكَ وَأَنْ تُلْهِمَني‌ ذِكْرَكَ اللّهُمَّ إِنِّي‌ أَسْأَلُكَ سُؤالَ خاضِعٍ مُتَذَلِّلٍ خاشِعٍ أَنْ تُسامِحَني‌ وَتَرْحَمَني‌ وَتَجْعَلَني‌ بِقِسْمِكَ راضِياً قانِعاً وَفي‌ جَمِيعِ الأَحْوالِ مُتَواضِعاً اللّهُمَّ وَأَسْأَلُكَ سُؤالَ مَنِ اشْتَدَّتْ فاقَتُهُ وَأَنْزَلَ بِكَ عِنْدَ الشَّدائِدِ حاجَتُهُ وَعَظُمَ فِيما عِنْدَكَ رَغبَتُهُ اللّهُمَّ عَظُمَ سُلْطانُكَ وَعَلا مَكانُكَ وَخَفِي‌َ مَكْرُكَ وَظَهَرَ أَمْرُكَ وَغَلَبَ قَهْرُكَ وَجَرَتْ قُدْرَتُكَ وَلا يُمْكِنُ الفِرارُ مِنْ حُكُومَتِكَ اللّهُمَّ لا أَجِدُ لِذُنُوبي‌ غافِراً وَلا لِقَبائِحي‌ ساتِراً وَلا لِشَيْءٍ مِنْ عَمَلِي‌َ القَبيحِ بِالحَسَنِ مُبَدِّلاً غَيْرَكَ لا إِلهَ إِلاّ أَنْتَ سُبْحانَكَ وَبِحَمْدِكَ ظَلَمْتُ نَفْسِي‌ وَتَجَرَّأْتُ بِجَهْلي‌ وَسَكَنْتُ إِلى قَدِيمِ ذِكْرِكَ لي‌ وَمَنِّكَ عَلَي‌َّ اللّهُمَّ مَولاي‌َ كَمْ مِنْ قَبِيحٍ سَتَرْتَهُ وَكَمْ مِنْ فادِحٍ مِنَ البلاءِ أَقَلْتَهُ وَكَمْ مِنْ عِثارٍ وَقَيتَهُ وَكَمْ مِنْ مَكْرُوهٍ دَفَعْتَهُ وَكَمْ مِنْ ثَناءٍ جَمِيلٍ لَسْتُ أَهْلاً لَهُ نَشَرْتَهُ اللّهُمَّ عَظُمَ بلائِي‌ وَأَفْرَطَ بي‌ سُوءُ حالي‌ وَقَصُرَت‌ بي‌ أَعْمالي‌ وَقَعَدَتْ بي‌ أَغْلالي‌ وَحَبَسَني‌ عَنْ نَفْعِي‌ بعْدُ أَمَلي‌ وَخَدَعَتْني‌ الدُّنيا بِغُرُورِها وَنَفْسِي‌ بِخِيانَتِها وَمِطالي‌ يا سَيدِي‌ فَأَسْئَلُكَ بِعِزَّتِكَ أَنْ لا يَحْجُبَ عَنْكَ دُعائِي‌ سُوءُ عَمَلي‌ وَفِعالي‌ وَلا تَفْضَحْني‌ بِخَفي‌ِّ ما اطَّلَعْتَ عَلَيهِ مِنْ سِرِّي‌ وَلا تُعاجِلْني‌ بِالعُقُوبَةِ عَلى ما عَمِلْتُهُ في‌ خَلَواتي‌ مِن‌ سُوءِ فِعْلي‌ وَإِسائَتي‌ وَدَوامِ تَفْرِيطِي‌ وَجَهالَتي‌ وَكَثْرَةِ شَهَواتي‌ وَغَفْلَتي‌ وَكُنِ اللّهُمَّ بِعِزَّتِكَ لي‌ في‌ الأَحْوالِ كُلِّها رَؤُفاً وَعَلَي‌َّ في‌ جَميعِ الأُمُورِ عَطُوفاً إِلهي‌ وَرَبِّي‌ مَنْ لي‌ غَيْرُكَ أَسْئَلُهُ كَشْفَ ضرِّي‌ وَالنَّظَرَ في‌ أَمْرِي‌ إِلهي‌ وَمَوْلاي‌َ أَجْرَيْتَ عَلَي‌َّ حُكْماً اتَّبَعْتُ فيهِ هَوى نَفْسِي‌ وَلَمْ أَحْتَرِسْ فيهِ مِنْ تَزْيينِ عَدُوِّي‌ فَغَرَّني‌ بِما أَهْوى وَأَسْعَدَهُ عَلى ذلِكَ القَضاءُ فَتَجاوَزْتُ بِما جَرى عَلَي‌َّ مِن‌ ذلِكَ بعْضَ حُدُودِكَ وَخالَفْتُ بعْضَ أَوامِرِكَ فَلَكَ الحُجَّةُ عَلَي‌َّ في‌ جَميعِ ذلِكَ وَلا حُجَّةَ لي‌ فِيما جَرى عَلَي‌َّ فِيهِ قَضاؤُكَ وَأَلْزَمَني‌ حُكْمُكَ وَبلاؤُكَ وَقَدْ أَتَيتُكَ يا إِلهي‌ بعْدَ تَقْصِيرِي‌ وَإِسْرافي‌ عَلى نَفْسِي‌ مُعْتَذِراً نادِماً مُنْكَسِراً مُسْتَقِيلاً مُسْتَغْفِراً مُنِيباً مُقِرّاً مُذْعِناً مُعْتَرِفاً لا أَجِدُ مَفَرّاً مِّما كانَ مِنِّي‌ وَلا مَفْزَعاً أَتَوَجَّهُ إِلَيْهِ في‌ أَمْري‌ غَيْرَ قَبُولِكَ عُذْري‌ وَإِدْخالِكَ إِياي‌َ في‌ سَعَةٍ مِنْ رَحْمَتِكَ اللّهُمَّ فَاقْبلْ عُذْرِي‌ وَارْحَمْ شِدَّةَ ضُرِّي‌ وَفُكَّني‌ مِنْ شَدِّ وَثاقي‌ يا رَبِّ ارْحَمْ ضَعْفَ بَدَني‌ وَرِقَّةَ جِلْدِي‌ وَدِقَّةَ عَظْمِي‌ يا مَنْ بدَءَ خَلقِي‌ وَذِكْرِي‌ وَتَرْبِيَتي‌ وَبِرِّي‌ وَتَغْذِيَتي‌ هَبْني‌ لابْتِدَاءِ كَرَمِكَ وَسالِفِ بِرِّكَ بي‌ يا إِلهي‌ وَسَيدِي‌ وَرَبِّي‌ أَتُراكَ مُعَذِّبي‌ بِنارِكَ بعْدَ تَوْحِيدِكَ وَبعْدَمَا انْطَوى عَلَيهِ قَلْبِي‌ مِنْ مَعْرِفَتِكَ وَلَهِجَ بِهِ لِساني‌ مِنْ ذِكْرِكَ وَاعْتَقَدَهُ ضَمِيري‌ مِنْ حُبكَ وَبعْدَ صِدْقِ اعْتِرافي‌ وَدُعائِي‌ خاضِعاً لِرُبوبِيتِكَ هَيْهاتَ أَنْتَ أَكْرَمُ مِنْ أَنْ تُضَيِّعَ مَنْ رَبَّيْتَهُ أَوْ تُبَعِّدَ مَنْ أَدْنَيْتَهُ أَوْ تُشَرِّدَ مَنْ آوَيْتَهُ أَوْ تُسَلِّمَ إِلىَ البَلاءِ مَنْ كَفَيتَهُ وَرَحِمْتَهُ وَلَيتَ شِعْرِي‌ يا سَيدِي‌ وَإِلهي‌ وَمَولاي‌َ أَتُسَلِّطُ النّارَ عَلى وَجُوهٍ خَرَّتْ لِعَظَمَتِكَ ساجِدَةً وَعَلى أَلْسُنٍ نَطَقَتْ بِتَوْحيدِكَ صادِقَةً وَبِشُكْرِكَ مادِحَةً وَعَلى قُلُوبٍ اعْتَرَفَتْ بِإِلهِيَّتِكَ مُحَقِّقَةً وَعَلى ضَمائِرَ حَوَت‌ مِنَ العِلْمِ بِكَ حَتّى صارَتْ خاشِعَةً وَعَلى جَوارِحَ سَعَتْ إِلى أَوْطانِ تَعَبُّدِكَ طائِعَةً وَأَشارَتْ بِاسْتِغْفارِكَ مُذْعِنَةً ما هكَذَا الظَّنُّ بِكَ وَلا أُخْبِرْنا بِفَضْلِكَ عَنْكَ يا كَرِيمُ يا رَبِّ وَأَنْتَ تَعْلَمُ ضَعْفِي‌ عَنْ قَليلٍ مِنْ بَلاءِ الدُّنيا وَعُقُوباتِها وَما يَجْرِي‌ فِيها مِنَ المَكارِهِ عَلى أَهْلِها عَلى أَنَّ ذلِكَ بلاءٌ وَمَكْرُوهٌ قَلِيلٌ مَكْثُهُ يَسِيرٌ بقاؤُهُ قَصِيرٌ مُدَّتُهُ فَكَيفَ احْتِمالي‌ لِبلاءِ الآخِرَةِ وَجَلِيلِ وُقُوعِ المَكارِهِ فِيها وَهُوَ بلاءٌ تَطُولُ مُدَّتُهُ وَيدُومُ مَقامُهُ وَلا يُخَفَّفُ عَنْ أَهْلِهِ لأَنَّهُ لا يكُونُ إِلاّ عَنْ غَضَبِكَ وَانْتِقامِكَ وَسَخَطِكَ وَهذَا مالا تَقُومُ لَهُ السَّماوَاتُ وَالأَرْضُ يا سَيدِي‌ فَكَيْفَ بي‌ وَأَنَا عَبْدُكَ الضَّعِيفُ الذَّلِيلُ الحَقِيرُ المِسْكِينُ المُسْتَكِينُ يا إِلهي‌ وَرَبِّي‌ وَسَيِّدِي‌ وَمَوْلاي‌َ لأَي‌ِّ الأُمُورِ إِلَيكَ أَشْكُو وَلِما مِنْها أَضِجُّ وَأَبكِي‌ لأَلِيمِ العَذابِ وَشِدَّتِهِ أَوْ لِطُولِ البَلاءِ وَمُدَّتِهِ فَلَئِنْ صَيَّرْتَني‌ في‌ العُقُوباتِ مَعَ أَعْدائِكَ وَجَمَعْتَ بَيْني‌ وَبيْنَ أَهْلِ بَلائِكَ وَفَرَّقْتَ بَيْني‌ وَبَيْنَ أَحِبّائِكَ وَأَوْلِيائِكَ فَهَبْني‌ يا إِلهي‌ وَسَيِّدِي‌ وَمَوْلاي‌َ وَرَبِّي‌ صَبَرْتُ عَلى عَذابِكَ فَكَيفَ أَصْبِرُ عَلى فِراقِكَ وَهَبْني‌ يا إِلهي‌ صَبَرْتُ عَلى حَرِّ نارِكَ فَكَيْفَ أَصْبِرُ عَنِ النَّظَرِ إِلى كَرامَتِكَ أَمْ كَيفَ أَسْكُنُ في‌ النّارِ وَرَجائِي‌ عَفْوُكَ فَبِعِزَّتِكِ يا سَيدِي‌ وَمَوْلاي‌َ أُقْسِمُ صادِقاً لَئِنْ تَرَكْتَني‌ ناطِقاً لأََضِجَّنَّ إِلَيْكَ بَيْنَ أَهْلِها ضَجيجَ الآمِلينَ وَلأََصْرُخَنَّ إِلَيْكَ صُراخَ المُستَصرِخِينَ وَلأََبكِيَنَّ عَلَيْكَ بكاءَ الفاقِدِينَ وَلأَُنادِينَّكَ أَيْنَ كُنْتَ يا وَلِي‌َّ المُؤْمِنينَ يا غايَةَ آمالِ العارِفِينَ يا غِياثَ المُسْتَغِيثِينَ ويا حَبِيبَ قُلُوبِ الصَّادِقِينَ وَيا إِلهَ العالَمِينَ أَفَتُراكَ سُبْحانَكَ يا إِلهي‌ وَبِحَمْدِكَ تَسْمَعُ فيها صَوْتَ عَبْدٍ مُسْلِمٍ سُجِنَ فِيها بِمُخالَفَتِهِ وَذاقَ طَعْمَ عَذابِها بِمَعْصِيتِهِ وَحُبِسَ بيْنَ أَطْباقِها بِجُرْمِهِ وَجَرِيرَتِهِ وَهُوَ يضِجُّ إِلَيْكَ ضَجِيجَ مُؤَمِّلٍ لِرَحْمَتِكَ وَينادِيكَ بِلِسانِ أَهْلِ تَوْحِيدِكَ وَيَتَوَسَّلُ إِلَيْكَ بِرُبُوبِيَّتِكَ يا مَوْلاي‌َ فَكَيْفَ يَبْقى في‌ العَذابِ وَهُوَ يرْجُو ما سَلَفَ مِنْ حِلْمِكَ وَرَأْفَتِكَ وَرَحْمَتِكَ أَم‌ كَيْفَ تُؤلِمُهُ النّارُ وَهُوَ يأْمُلُ فَضْلَكَ وَرَحْمَتَكَ أَمْ كَيفَ يُحْرِقُهُ لَهَبُها وَأَنْتَ تَسْمَعُ صَوْتَهُ وَتَرى مَكانَهُ أَمْ كَيفَ يشْتَمِلُ عَلَيْهِ زَفِيرُها وَأَنْتَ تَعْلَمُ ضَعْفَهُ أَمْ كَيْفَ يَتَغَلْغَلُ بَيْنَ أَطْباقِها وَأَنْتَ تَعْلَمُ صِدْقَهُ أَمْ كَيفَ تَزْجُرُهُ زَبانِيتُها وَهُوَ يُنادِيكَ يا رَبَّهُ أَمْ كَيْفَ يَرجُو فَضْلَكَ في‌ عِتْقِهِ مِنْها فَتَتْرُكُهُ فِيها هَيْهاتَ ما ذلِكَ الظَّنُّ بِكَ وَلا المَعْرُوفُ مِنْ فَضْلِكَ وَلا مُشبِهٌ لِما عامَلتَ بِهِ المُوَحِّدِينَ مِنْ بِرِّكَ وَإِحْسانِكَ فَبِاليَقِينِ أَقْطَعُ لَوْلا ما حَكَمْتَ بِهِ مِنْ تَعْذِيبِ جاحِدِيكَ وَقَضَيْتَ بِهِ مِنْ إِخْلادِ مُعانِدِيكَ لَجَعَلْتَ النّارَ كُلَّها بَرْداً وَسَلاماً وَما كانَ لأَحَدٍ فِيها مَقَرّاً وَلا مُقاماً لكِنَّكَ تَقَدَّسَتْ أَسْماؤُكَ أَقْسَمْتَ أَنْ تَمْلأََها مِنَ الكافِرينَ مِنَ الجِنَّةِ وَالنّاسِ أَجْمَعينَ وَأَنْ تُخَلِّدَ فِيها المُعانِدينَ وَأَنْتَ جَلَّ ثَناؤُكَ قُلْتَ مُبْتَدِئاً وَتَطَوَّلْتَ بِالأَنْعامِ مُتَكَرِّماً أَفَمَنْ كانَ مُؤْمِناً كَمَنْ كانَ فاسِقاً لا يَسْتَوُونَ إِلهي‌ وَسَيدِي‌ فَأَسْئَلُكَ بِالقُدْرَةِ الَّتي‌ قَدَّرْتَها وَبِالقَضِيةِ الَّتي‌ حَتَمْتَها وَحَكَمْتَها وَغَلَبْتَ مَنْ عَلَيهِ أَجْرَيْتَها أَنْ تَهَبَ لي‌ في‌ هذِهِ اللَّيلَةِ وَفي‌ هذِهِ السَّاعَةِ كُلَّ جُرْمٍ أَجْرَمْتُهُ وَكُلَّ ذَنْبٍ أَذنَبْتُهُ وَكُلَّ قَبِيحٍ أَسْرَرْتُهُ وَكُلَّ جَهْلٍ عَمِلْتُهُ كَتَمْتُهُ أَوْ أَعْلَنْتُهُ أَخْفَيْتُهُ أَوْ أَظْهَرْتُهُ وَكُلَّ سَيِّئَةٍ أَمَرْتَ بِإِثْباتِها الكِرامَ الكاتِبينَ الَّذينَ وَكَّلْتَهُمْ بِحِفْظِ ما يَكُونُ مِنِّي‌ وَجَعَلْتَهُمْ شُهُوداً عَلَي‌َّ مَعَ جَوارِحِي‌ وَكُنْتَ أَنْتَ الرَّقِيبَ عَلَي‌َّ مِنْ وَرائِهِمْ وَالشّاهِدَ لِما خَفِي‌َ عَنْهُمْ وَبِرَحْمَتِكَ أَخْفَيتَهُ وَبِفَضْلِكَ سَتَرْتَهُ وَأَن‌ تُوَفِّرَ حَظِّي‌ مِنْ كُلِّ خَيْرٍ تُنْزِلُهُ أَوْ إِحْسانٍ تُفْضِلُهُ أَوْ بِرٍّ تَنْشُرُهُ أَوْ رِزْقٍ تَبْسُطُهُ أَوْ ذَنْبٍ تَغْفِرُهُ أَوْ خَطَإٍ تَسْتُرُهُ يا رَبِّ يا رَبِّ يا رَبِّ يا إِلهي‌ وَسَيدِي‌ وَمَوْلاي‌َ وَمالِكَ رِقِّي‌ يا مَنْ بِيَدِهِ ناصِيَتي‌ يا عَليماً بِضُرِّي‌ وَمَسْكَنَتي‌ يا خَبِيراً بِفَقْرِي‌ وَفاقَتي‌ يا رَبِّ يا رَبِّ يا رَبِّ أَسْئَلُكَ بِحَقِّكَ وَقُدْسِكَ وَأَعْظَمِ صِفاتِكَ وَأَسْمائِكَ أَن‌ تَجْعَلَ أَوْقاتي‌ مِنَ اللَّيلِ وَالنَّهارِ بِذِكْرِكَ مَعْمُورَةً وَبِخِدْمَتِكَ مَوْصُولَةً وَأَعْمالي‌ عِنْدَكَ مَقْبولَةً حَتّى تَكُونَ أَعْمالي‌ وَأَوْرادِي‌ كُلُّها وِرْداً واحِداً وَحالي‌ في‌ خِدْمَتِكَ سَرْمَداً يا سَيِّدِي‌ يا مَنْ عَلَيْهِ مُعَوَّلي‌ يا مَنْ إِلَيْهِ شَكَوْتُ أَحْوالي‌ يا رَبِّ يا رَبِّ يا رَبِّ قَوِّ عَلى خِدْمَتِكَ جَوارِحِي‌ وَاشْدُدْ عَلىَ العَزيمَةِ جَوانِحِي‌ وَهَبْ لي‌َ الجِدَّ في‌ خَشْيتِكَ وَالدَّوامَ في‌ الاتِّصالِ بِخِدْمَتِكَ حَتّى أَسْرَحَ إِلَيْكَ في‌ مَيادِينَ السّابِقِينَ وَأُسْرِعَ إِلَيْكَ في‌ المُبادِرِينَ وَأَشْتاقَ إِلى قُرْبِكَ في‌ المُشْتاقِينَ وَأَدْنُوَ مِنْكَ دُنُوَّ الُمخْلِصِينَ وَأَخافَكَ مَخافَةَ المُوقِنِينَ وَأَجْتَمِعَ في‌ جِوارِكَ مَعَ المُؤْمِنِينَ اللّهُمَّ وَمَنْ أَرادَني‌ بِسُوءٍ فَأَرِدْهُ وَمَنْ كادَني‌ فَكِدْهُ وَاجْعَلْني‌ مِنْ أَحْسَنِ عَبِيدِكَ نَصِيباً عِنْدَكَ وَأَقْرَبِهِمْ مَنْزِلَةً مِنْكَ وَأَخَصِّهِمْ زُلْفَةً لَدَيكَ فَإِنَّهُ لا ينالُ ذلِكَ إِلاّ بِفَضْلِكَ وَجُدْ لي‌ بِجُودِكَ وَاعْطِفْ عَلَي‌َّ بِمَجْدِكَ وَاحْفَظْني‌ بِرَحْمَتِكَ وَاجْعَل‌ لِساني‌ بِذِكْرِكَ لَهِجاً وَقَلْبي‌ بِحُبِّكَ مُتَيَّماً وَمُنَّ عَلَي‌َّ بَحُسْنِ إِجابَتِكَ وَأَقِلْني‌ عَثْرَتي‌ وَاغْفِرْ زَلَّتي‌ فَإِنَّكَ قَضَيْتَ عَلى عِبادِكَ بِعِبادَتِكَ وَأَمَرْتَهُمْ بِدُعائِكَ وَضَمِنْتَ لَهُمُ الإِجابَةَ فَإِلَيكَ يا رَبِّ نَصَبْتُ وَجْهِي‌ وَإِلَيْكَ يا رَبِّ مَدَدْتُ يَدِي‌ فَبِعِزَّتِكَ اسْتَجِبْ لي‌ دُعائِي‌ وَبلِّغْني‌ مُناي‌َ وَلا تَقْطَعْ مِنْ فَضْلِكَ رَجائي‌ وَاكْفِني‌ شَرَّ الجِنِّ وَالأَنْسِ مِنْ أَعْدائِي‌ يا سَرِيعَ الرِّضا اِغْفِرْ لِمَنْ لا يَمْلِكُ إِلاّ الدُّعاءَ فَإِنَّكَ فَعّالٌ لِما تَشاءُ يا مَنِ اسْمُهُ دَواءٌ وَذِكْرُهُ شِفاءٌ وَطاعَتُهُ غِنيً ارْحَمْ مَنْ رَأْسُ مالِهِ الرَّجاءُ وَسِلاحُهُ البكاءُ يا سابِغَ النِّعَمِ يا دافِعَ النِّقَمِ يا نُورَ المُسْتَوْحِشِينَ في‌ الظُّلَمِ يا عالِماً لا يعَلَّمُ صَلِّ على مُحَمَّدٍ وَآلِ مُحَمَّدٍ وَافْعَلْ بي‌ ما أَنْتَ أَهْلُهُ وَصَلَّىَ اللهُ عَلى رَسُولِهِ وَالأَئِمَةِ المَيامينَ مِنْ آلِهِ وَسَلَّمَ تَسْليماً كَثِيراً

Urdu

اے معبود میں تجھ سے سوال کرتا ہوں تیری رحمت کے ذریعے جوہر شی پر محیط ہے تیری قوت کے ذریعے جس سے تو نے ہر شی کو زیر نگیں کیا اور اس کے سامنے ہر شی جھکی ہوئی اور ہر شی زیر ہے اور تیرے جبروت کے ذریعے جس سے توہر شی پر غالب ہے ‌تیری عزت کے ذریعے جسکےآگے کوئی چیز ٹھہرتی نہیں تیری عظمت کے ذریعے جس نے ہر چیز کو پر کر دیا تیری سلطنت کے ذریعے جو ہر چیز سے بلند ہے تیری ذات کے واسطے سےجوہر چیز کی فنا کے بعد باقی رہے گی اورسوال کرتا ہوں تیرے ناموں کے ذریعے جنہوں نے ہر چیز کے ‌اجزاء کو پر کر رکھا ہے تیرے علم کے ذریعے جس نےہر چیز کو گھیر رکھا ہے اور تیری ذات کے نور کے ذریعے جس سے ہر چیز روشن ہوئی ہے یانور یاقدوس ‌اے اولین میں سب سے اول اور اے آخرین میں سب سے آخر.اے معبود میرے ان گناہوں کو معاف کر دے جو پردہ فاش کرتے ہیں خدایا! میرے وہ گناہ معاف کر دے جن سے عذاب نازل ہوتا ہےخدایا میرے وہ گناہ بخش دے جن سے نعمتیں زائل ہوتی ہیں اے معبود! میرے وہ گناہ ‌معاف فرما جو دعا کو روک لیتے ہیں اے اللہ میرے وہ گناہ بخش دے جن سے بلائیں نازل ہوتی ہے اے خدا میرا ہر وہ گناہ معاف فرما جو میں نے کیا ہے ‌اور ہر لغزش سے درگزر کر جو مجھ سے ہو ئی ہےاے اللہ میں تیرے ذکر کے ذریعے تیرا تقرب چاہتا ہوں اور تیری ذات کو تیرے ‌حضور اپنا سفارشی بناتا ہوں تیرے جود کے واسطے سے سوال کرتا ہوں کہ مجھے اپناقرب عطا فرما اور توفیق دے کہ تیرا شکر ادا کروں اور میری زبان پر اپنا ذکر جاری فرما اے اللہ میں سوال کرتا ہوں جھکے ہوئے گرے ہوئے ڈرے ہوئے کیطرح کہ مجھ سے چشم پوشی فرما مجھ پر رحمت کر اور مجھے اپنی تقدیر پر راضی و قانع اور ہر قسم کے حالات میں نرم خو رہنے والا بنا دے یااللہ میں تجھ سے سوال کرتا ہوں اس شخص کیطرح جو سخت تنگی میں ہو سختیوں میں پڑا ہواپنی حاجت لے کر تیرے پاس آیاہوں اور جو کچھ تیرے پاس ہے اس میں زیادہ رغبت رکھتا ہوں اے اللہ تیری عظیم سلطلنت اور تیرا مقام بلند ہے تیری تدبیر پوشیدہ اور تیرا امر ظاہر ہے تیرا قہر غالب تیری قدرت کارگر ہے اور تیری حکومت سے فرار ممکن نہیں خداوندا میں تیرے سوا کسی کو نہیں پاتا جو میرے گناہ بخشنے والا میری برائیوں کو چھپانے والااور میرے برے عمل کو نیکی میں بدل دینے والا ہو تیرے سوا کوئی معبود نہیں تو پاک ہے اور حمد تیرے ہی لیے ہے میں نے اپنے نفس پر ظلم کیااپنی جہالت کی وجہ سے جرأت کی اور میں نے تیری قدیم یاد آوری اور اپنے لیے تیری بخشش پر بھروسہ کیا ہے اے اللہ : میرے مولا کتنے ہی گناہوں کی تو نے پردہ پوشی کی اور کتنی سخت بلاؤں سے مجھے بچالیا کتنی لغزشیں معاف فرمائیں اور کتنی ہی برائیاں مجھ سے دور کیں تو نے میری کتنی ہی تعریفیں عام کیں جن کا میں ہر گز اہل نہ تھااے معبود! میری مصیبت عظیم ہے بدحالی کچھ زیادہ ہی بڑھ چکی ہے میرے اعمال ‌ بہت کم ہیں گناہوں کی زنجیر نے مجھے جکڑ لیا ہےلمبی آرزوؤں نے مجھے اپنا قیدی بنا رکھا ہے دنیا نے دھوکہ بازی سے اور نفس نے جرائم اور حیلہ سازی سے مجھ کو فریب دیا ہے اے میرے آقامیں تیری عزت کا واسطہ دے کر سوال کرتا ہوں کہ ‌ میری بدعملی و بدکرداری میری دعا کو تجھ سے نہ روکے اور تو مجھے میرے پوشیدہ کاموں سے رسوا نہ کرے جن میں تو میرے راز کو جانتاہے اور مجھے اس پر سزا دینے میں جلدی نہ کر جو میں نے خلوت میں غلط کام کیا برائی کی ہمیشہ کوتاہی کی اس میں میری نادانی، خواہشوں کی کثرت ‌اور غفلت بھی ہے اور اے میرے اللہ تجھے اپنی عزت کا واسطہ میرے لیے ہر حال میں مہربان رہ اور تمام امور میں مجھ پر عنایت فرما میرے معبود میرے رب ‌تیرے سوا میرا کون ہے جس سے سوال کروں کہ میری تکلیف دور کر دے اور میرے معاملے پر نظر رکھ میرے معبود اور میرے مولا تو نے میرے لیے حکم صادر فرمایالیکن میں نے اس میں خواہش کا کہا مانا اور میں دشمن کی فریب کاری سے بچ نہ سکااس نے میری خواہشوں میں دھوکہ دیا ‌ اور وقت نے اسکا ساتھ دیا پس تو نے جو حکم صادر کیا میں نے اس میں تیری بعض حدود کو توڑا اور تیرے بعض احکام کی مخالفت کی پس اس معاملہ میں مجھ پر لازم ہے تیری حمد بجالانا اور میرے پاس کوئی حجت نہیں اس میں جو فیصلہ تو نے میرے لیے کیا ہےاور میرے لیے تیرا حکم اور تیری آزمائش لازم ہے اور اے اللہ میں تیرے حضور آیا ہوں جب کہ میں نے کو تاہی کی اور اپنے نفس پرزیادتی کی ہے میں عذر خواہ و پشیماں،ہارا ہوا، معافی کا طالب، بخشش کا سوالی ،تائب گناہوں کا اقراری، سرنگوں اور اقبال جرم کرتا ہوں جو کچھ مجھ سے ہوا نہ اس ‌سے فرار کی راہ ہے نہ کوئی جا ئے پناہ کہ اپنے معاملے میں اسکی طرف توجہ کروں سوائے اسکے کہ تو میرا عذر قبول کر اور مجھے اپنی وسیع تر رحمت میں داخل ‌ کرلے اے معبود! بس میرا عذر قبول فرمامیری سخت تکلیف پر رحم کر اور بھاری مشکل سے رہائی دے اے پروردگار میرے کمزور بدن، نازک جلد اور باریک ‌ ہڈیوں پر رحم فرما اے وہ ذات جس نے میری خلقت ذکر،پرورش، نیکی اور غذا کا آغاز کیا اپنے پہلے کرم اور گزشتہ نیکی کے تحت مجھے معاف فرما اے میرے معبودمیرے آقا اور میرے رب کیا میں یہ سمجھوں کہ تو مجھے اپنی آگ کا عذاب دے گا جبکہ تیری توحید کا معترف ہوں اسکے ‌ساتھ میرا دل تیری معرفت سے لبریز ہے اور میری زبان تیرے ذکر میں لگی ہوئی ہی میرا ضمیر تیری محبت سے جڑا ہوا ہے اور اپنے گناہوں کے سچے اعتراف ‌ اور تیری ربوبیت کے آگے میری عاجزانہ پکار کے بعد بھی تو مجھے عذاب دے گا۔ ہرگز نہیں! تو بلند ہے اس سے کہ جسے پالا ہو اسے ضائع کرے یا جسے قریب کیا ہو اسے دور کرے یا جسے پناہ دی ہو اسے چھوڑ دے یا جسکی سرپرستی کی ہو اور اس پر مہربانی کی ہو اسے مصیبت کے حوالے کر دے ‌ اے کاش میں جانتا اے میرے آقا میرے معبود!اور میرے مولاکہ کیا تو ان چہروں کو آگ میں ڈالے گا جو تیری عظمت کے سامنے سجدے میں پڑے ‌ہیں اور ان زبانوں کو جو تیری توحید کے بیان میں سچی ہیں اور شکر کے ساتھ تیری تعریف کرتی ہیں اور ان دلوں ‌کو جو تحقیق کیساتھ تجھے معبود مانتے ہیں اور ان ضمیروں کو جو تیری معرفت سے پر ہو کر تجھ سے خائف ہیں تو انہیں آ گ میں ڈالے گا؟ اور ان اعضاء کو جو فرمانبرداری سے تیری عبا دت گاہوں کی طرف دوڑتے ہیں اور یقین کے ساتھ تیری مغفرت کے طالب ہیں (تو انہیں آگ میں ڈالے) تیری ذات سے ایسا گمان نہیں، نہ یہ تیرے فضل کے مناسب ہے اے کریم اے پروردگار!دنیا کی مختصر تکلیفوں اور مصیبتوں کے مقابل تو میری ناتوانی کو جانتا ہے اور اہل دنیا پر جو تنگیاں آتی ہیں (میں انہیں برداشت نہیں کرسکتا)اگرچہ اس تنگی و سختی کا ٹھہراؤ اور بقاء کا وقت تھوڑا اور مدت کوتاہ ہے تو پھر ‌ کیونکر میں آخرت کی مشکلوں کو جھیل سکوں گا جو بڑی سخت ہیں اور وہ ایسی تکلیفیں ہیں جنکی مدت طولانی ،اقامت دائمی ہے اور ان میں سے کسی میں کمی نہیں ہو گی اس لیے کہ وہ تیرے غضب , انتقام اور تیری ناراضگی سے آتی ہیں اور یہ وہ سختیاں ہیں جنکے سامنے زمین وآسمان بھی کھڑے نہیں رہ سکتے تو اے آقا مجھ پر کیا گزرے گی جبکہ میں تیرا ‌ کمزور پست، بے حیثیت، بے مایہ اور بے بس بندہ ہوں اے میرے آقا اور میرے مولا! میں کن کن باتوں کی تجھ سے شکایت کروں اور کس کس کے لیے نالہ و شیون کروں؟ دردناک عذاب اور اس کی سختی کے لیےیا طولانی مصیبت اور اس کی مدت کی زیادتی کیلئے پس اگر تو نے مجھے عذاب و عقاب میں اپنے دشمنوں کے ساتھ رکھااور مجھے اوراپنے عذابیوں کو اکٹھا کر دیا اور میرے اور اپنے دوستوں اور ‌ محبوں میں دوری ڈال دی تو اے میرے معبود میرے آقا میرے مولا اور میرے رب تو ہی بتا کہ میں تیرے عذاب پر صبر کر ہی لوں تو تجھ سے دوری پر کیسے صبر کروں گا؟ اور مجھے بتاکہ میں نے تیری آگ کی تپش پر صبر کر ہی لیا تو تیرے کرم سے کسطرح چشم پوشی کرسکوں گا یا کیسے آگ میں پڑا رہوں گا جب کہ میں تیرے عفو کا امیدوار ہوں پس قسم ہے تیری عزت کی اے میرے آقا اور مولا سچی قسم کہ اگر تو نے میری ‌ گویائی باقی رہنے دی تو میں اہل نار کے درمیان تیرے حضور فریاد کروں گا آرزو مندوں کی طرح اور تیرے سامنے نالہ کروں گا جیسے مددگار کے متلاشی کرتے ہیں تیرے فراق میں یوں گریہ کروںگا جیسے ناامید ہونے والے گریہ کرتے ہیں اور تجھے پکاروں گا کہاں ہے تواے مومنوں کے مددگار اے عارفوں کی ‌امیدوں کے مرکز اے بیچاروں کی داد رسی کرنے والے اے سچے لوگوں کے دوست اور اے عالمین کے معبود کیا میں تجھے دیکھتا ہوں تو پاک ہے اس سے میرے اللہ اپنی حمد کے ساتھ کہ تو وہاں سے بندہ مسلم کی آواز سن رہا ہےجو بوجہ نافرمانی دوزخ میں ہے اپنی برائی کے باعث عذاب کا ذائقہ چکھ رہا ہے اور اپنے جرم گناہ پر جہنم کے طبقوں کے بیچوں بیچ بند ہے وہ تیرے سامنے گریہ کر رہا ہےتیری رحمت کے امیدوار کی طرح اور اہل توحید ‌ کی زبان میں تجھے پکار رہا ہے اور تیرے حضور تیری ربوبیت کو وسیلہ بنا رہا ہے اے میرے مولا! پس کس طرح وہ عذاب میں رہے گا جب کہ وہ ‌تیرے گزشتہ حلم کا امیدوار ہے یا پھر آگ کیونکر اسے تکلیف دے گی جبکہ وہ تیرے فضل اور رحمت کی امید رکھتا ہے یا آگ کے شعلے کیسے اس کو جلائیں گے جبکہ تو اسکی آواز سن رہا ہے اور اس کے مقام کو دیکھ رہا ہے یا کیسے آگ کے شرارے اسے ‌ گھیریں گے جبکہ تو اسکی ناتوانی کو جانتا یا کیسے وہ جہنم کے طبقوں میں پریشان رہے گا جبکہ تو اس کی سچائی سے واقف ہے یا کیسے جہنم کے فرشتے اسے جھڑکیں گے جبکہ وہ تجھے پکار رہا ہے اے میرے رب یا کیسے ممکن ہے کہ وہ خلاصی میں تیرے فضل کا امیدوار ہو اور تو اسے جہنم میں رہنے دے ہرگز نہیں! تیرے بارے میں یہ گمان نہیں ہو سکتا نہ تیرے فضل کا ایسا تعارف ہے نہ یہ توحید پرستوں پر تیرے احسان و کرم سے مشابہ ہے پس میں یقین رکھتا ہوں کہ اگر تو نے اپنے دشمنوں کو آگ کا عذاب دینے کا حکم نہ دیا ہوتا اور اپنے مخالفوں کو ‌ ہمیشہ اس میں رکھنے کا فیصلہ نہ کیا ہوتا تو تو آگ کو ٹھنڈی اور آرام بخش بنا دیتااور کسی کو بھی آگ میں جگہ اور ٹھکانہ نہ دیا جاتا لیکن تو نے اپنے پاکیزہ ناموں کی قسم کھائی کہ جہنم کو تمام کافروں سے بھر دے گا جنّوں اور انسانوں میں سےاور یہ مخالفین ہمیشہ اس میں رہیں گے اور تو بڑی‌تعریف والا ہے تو نے فضل و کرم کرتے ہوئے بلا سابقہ یہ فرمایا کہ کیا وہ شخص جو مومن ہے وہ فاسق جیسا ہو سکتا ہے؟ ‌ یہ دونوں برابر نہیں میرے معبود میرے آقا! میں تیری قدرت جسے تو نے توانا کیا اور تیرا فرمان جسے یقینی و محکم بنایا اور تو غالب ہے ‌ اس پر جس پر اسے جاری کرےاسکے واسطے سے سوال کرتا ہوں بخش دے اس شب میں اور اس ساعت میں میرے تمام وہ جرم جو میں نے کیے تمام وہ گناہ جو مجھ سے سرزد ہوئےوہ سب برائیاں جو میں نے چھپائی ہیں جو نادانیاں میں نے جہل کی وجہ سے کیں ہیں علی الاعلان یا پوشیدہ، رکھی ‌ ہوں یا ظاہر کیں ہیں اور میری بدیاں جن کے لکھنے کا تو نے معزز کاتبینکو حکم دیا ہے جنہیں تو نے مقرر کیا ہے کہ جو کچھ میں کروں اسے محفوظ کریں اور ان کو ‌میرے اعضاء کے ساتھ مجھ پر گواہ بنایا اور انکے علاوہ خود تو بھی مجھ پر ناظر اور اس بات کا گواہ ہے جو ان سے پوشیدہ ہےحالانکہ تو نے اپنی رحمت سے اسے ‌ چھپایا اور اپنے فضل سے اس پر پردہ ڈالاوہ معاف فرما اور میرے لیے وافر حصہ قرار دے ہر اس خیر میں جسے تو نے نازل کیایا ہر اس احسان میں جو تو نے کیا یا ہر نیکی میں جسے تو نے پھیلایا رزق میں جسے تو نے وسیع کیا یا گناہ میں جسے تو معاف نے کیا یا غلطی میں جسے تو نے چھپایا یارب یا رب یا رب اے میرے معبود میرے آقا اورمیرے مولا اور میری جان کے مالک اے وہ جسکے ہاتھ میں میری لگام ہے اے میری تنگی و بے چارگی سے واقف اے میری ناداری و تنگدستی سے باخبر یارب یارب یارب میں تجھ سے تیرے حق ہونے، تیری پاکیزگی، تیری عظیم صفات اور اسماء کا واسطہ دے کر سوال کرتا ہوں کہ میرے رات دن کے اوقات اپنے ذکر سے آباد کر اور مسلسل اپنی حضوری میں رکھ اور میرے اعمال کواپنی جناب میں قبولیت عطا فرما حتیکہ میرے تمام اعمال اور اذکار تیرے حضور ورد قرار پائیں اور میرا یہ حال تیری بارگاہ میں ہمیشہ قائم رہے اے میرے ‌ آقا اے وہ جس پر میرا تکیہ ہے اے جس سے میں اپنے حالات کی تنگی بیان کرتا ہوں یارب یارب یارب میرے ظاہری اعضاء کو اپنی حضوری میں قوی اور میرے باطنی ارادوں کو محکم و مضبوط بنا دےاور مجھے توفیق دے کہ تجھ سے ڈرنے کی کوشش کروں اور تیری حضوری میں ہمیشگی پیدا کروں تاکہ تیری بارگاہ میں سابقین کی راہوں پر چل پڑ و ں اور تیری طر ف جا نے والوں سے آگے نکل جا ؤں تیرے قرب کا شوق رکھنے والوں میں زیادہ شوق والا بن جاؤں تیرے خالص بندوں کی طرح تیرے قریب ہو جاؤں اہل یقین کی مانند تجھ سے ڈروں ‌اور تیرے آستانہ پر مومنوں کے ساتھ حاضر رہوں اے معبود جو میرے لئے برائی کا ارادہ کرے تو اسکے لئے ایسا ہی کرجو میرے ساتھ مکر کر ے تو اسکے ساتھ بھی ایسا ہی کر مجھے اپنے بند و ں میں قر ار دے جو نصیب میں بہتر ہیں جومنزلت میں تیرے قریب ہیں جو تیرے حضور تقرب میں مخصوص ہیں کیونکہ تیرے فضل کے بغیر یہ درجات نہیں مل سکتے بواسطہ اپنے کرم کے مجھ پر کرم کر بذریعہ اپنی بزرگی کے مجھ پر توجہ فرما بوجہ ‌اپنی رحمت کے میری حفاظت کر میری زبان کو اپنے ذکر میں گویا فرما اور میرے دل کو اپنا اسیر محبت بنا دی میری دعا بخوبی قبول فرما مجھ پر احسان فرما میرا گناہ ‌معاف کر دے اور میری خطا بخش دے کیونکہ تو نے بندوں پر عبادت فرض کی ہے اور انہیں دعا مانگنے کا حکم دیا اور قبولیت کی ضمانت دی پس اے پروردگار میں ‌اپنا رخ تیری طرف کر رہا ہوں اور تیرے آگے ہاتھ پھیلا رہا ہوں تو اپنی عزت کے طفیل میری د عا قبول فرما میری تمنائیں برلااور اپنے فضل سے لگی میری امید نہ توڑ میرے دشمن جو جنّوں اور انسانوں سے ہیں ان کے شر سے میری کفایت کر اے جلد ‌را ضی ہونے والے مجھے بخش دےجو دعا کے سوا کچھ نہیں ر کھتا بے شک تو جو چا ہے کرنے والا ہے اے وہ جس کا نام دوا جس ‌کا ذکر شفا اور اطاعت تونگری ہے رحم فرما اس پرجس کا سرمایہ محض امید ہےاور جس کا ہتھیار گریہ ہے اے نعمتیں پوری کرنے والے اے ‌سختیاں دور کرنے والے اے تاریکیوں میں ڈرنے والوں کیلئے نور اے وہ عالم جسے پڑھایا نہیں گیا محمد آل(ع) محمد پر رحمت فرما مجھ سے وہ سلوک کر جس کا ‌ تو اہل ہےخدا اپنے رسول پر اور بابرکت آئمہ پرسلام بھیجتا ہے بہت زیادہ سلام و جو انکی آل(ع) میں سے ہیں۔

Translation

O Allah! Bless Muhammad and his progeny. O Allah! I beseech Thee by Thy mercy which encompasses all things And by Thy power by which Thou overcometh all things and submit to it all things and humble before it all things And by Thy might by which Thou hast conquered all things And by Thy majesty against which nothing can stand up And by Thy grandeur which prevails upon all things And by Thy authority which is exercised over all things And by Thy own self that shall endure forever after all things have vanished And by Thy Names which manifest Thy power over all things And by Thy knowledge which pervades all things And by the light of Thy countenance which illuminates everything O Thou who art the light! O Thou who art the most holy! O Thou who existed before the foremost! O Thou who shall exist after the last! O Allah! Forgive me my such sins as would affront my continency O Allah! Forgive me my such sins as would bring down calamity O Allah! Forgive me my such sins as would change divine favours (into disfavours (O Allah! Forgive me my such sins as would hinder my supplication O Allah! Forgive me such sins as bring down misfortunes (or afflictions) O Allah! Forgive my such sins as would suppress hope O Allah! Forgive every sin that I have committed and every error that I have erred O Allah! I endeavour to draw myself nigh to Thee through Thy invocation And I pray to Thee to intercede on my behalf And I entreat Thee by Thy benevolence to draw me nearer to Thee And grant me that I should be grateful to Thee and inspire me to remember and to invoke Thee O Allah! I entreat Thee begging Thee submissively, humbly and awestrickenly To treat me with clemency and mercy, and to make me pleased and contented with what Thou hast allotted to me And cause me to be modest and unassuming in all circumstances O Allah! I beg Thee as one who is passing through extreme privation and who supplicates his needs to Thee and his hope has been greatly raised by that which is with Thee O Allah! Great is Thy kingdom and exalted is Thy greatness Thy plan is secret, Thy authority is manifest, Thy might is victorious and subduing and Thy power is prevalent throughout and it is not possible to escape from Thy dominion O Allah! Except Thee I do not find any one able to pardon my sins nor to conceal my loathsome acts Nor have I any one except Thee to change my evil deeds into virtues There is no god but Thou glory and praise be to Thee I have made my own soul to suffer I had the audacity (to sin) by my ignorance Relying upon my past remembrance of Thee and Thy grace towards me O Allah! My Lord! How many of my loathsome acts hast Thou screened (from public gaze) How many of my grievous afflictions (distresses) hast Thou reduced in severity And how many of my stumblings hast Thou protected, how many of my detestable acts has Thou averted, and how many of my undeserving praises hast Thou spread abroad! O Allah! My trials and sufferings have increased and my evilness has worsened, my good deeds have diminished and my yokes (of misdeeds) have become firm And remote hopes restrain me to profit (by good deeds) and the world has deceived me with its allurements and my own self has been affected by treachery and procrastination Therefore, my Lord! I implore Thee by Thy greatness not to let my sins and my misdeeds shut out access to my prayers from reaching Thy realm and not to disgrace me by exposing those (hidden ones) of which Thou hast knowledge nor to hasten my retribution for those vices and misdeeds committed by me in secret which were due to evil mindedness, ignorance, excessive lustfulness and my negligence O Allah! I beg Thee by Thy greatness to be compassionate to me in all circumstances and well disposed towards me in all matters My God! My Nourisher! Have I anyone except Thee from whom I can seek the dislodging of my evils and understanding of my problems? My God! My Master! Thou decreed a law for me but instead I obeyed my own low desires And I did not guard myself against the allurements of my enemy He deceived me with vain hopes whereby I was led astray and fate helped him in that respect Thus I transgressed some of its limits set for me by Thee and I disobeyed some of Thy commandments; Thou hast therefore a (just) cause against me in all those matters and I have no plea against Thy judgement passed against me I have therefore become (justifiably) liable to Thy judgement and afflictions But now I have turned Thee, my Lord, after being guilty of omissions and transgressions against my soul, apologetically, repentantly, broken heartedly, entreating earnestly for forgiveness, yieldingly confessing (to my guilt) as I can find no escape from that which was done by me and having no refuge to which I could turn except seeking Thy acceptance of my excuse and admitting me into the realm of Thy capacious mercy O Allah! Accept my apology and have pity on my intense sufferings and set me free from my heavy fetters (of evil deeds) My Nourisher! Have mercy on the infirmity of my body, the delicacy of my skin and the brittleness of my bones O' Thou! Who originated my creation and (accorded me) my individuality, and (ensured) my upbringing and welfare (and provided) my sustenance (I beg Thee) to restore Thy favours and blessings upon me as Thou didst in the beginning of my life O' my God! My master! My Lord! And my Nourisher! What! Wilt Thou see me punished with the fire kindled by Thee despite my belief in Thy unity? And despite the fact that my heart has been filled with (pure) knowledge of Thee and when my tongue has repeatedly praised Thee and my conscience has acknowledged Thy love and despite my sincere confessions (of my sins) and my humble entreaties submissively made to Thy divinity? Nay, Thou art far too kind and generous to destroy one whom thyself nourished and supported, or to drive away from Thyself one whom Thou has kept under Thy protection, or to scare away one whom Thy self hast given shelter, or to abandon in affliction one Thou hast maintained and to whom Thou hast been merciful I wish I had known o' my Master, my God and my Lord! Wilt Thou inflict fire upon faces which have submissively bowed in prostration to Thy greatness, or upon the tongues which have sincerely confirmed Thy unity and have always expressed gratitude to Thee, or upon hearts which have acknowledged Thy divinity with conviction, or upon the minds which accumulated so much knowledge of Thee until they became submissive to Thee, or upon the limbs which strove, at the places appointed for Thy worship, to adore Thee willingly and seek Thy forgiveness submissively? Such sort (of harshness) is not expected from Thee as it is remote from Thy grace, o' generous one! O' Lord! Thou art aware of my weakness to bear even a minor affliction of this world and its consequence and adversity affecting the denizen of this earth, although such afflictions are momentary, short-lived and transient How then can I bear the retributions and the punishments of the hereafter which are enormous and of intensive sufferings, of prolonged period and perpetual duration, and which shall never be alleviated for those who deserve the same as those retributions will be the result of Thy wrath; and Thy punishment which neither the heavens nor the earth can withstand and bear! My Lord! How can I, a weak, insignificant, humble, poor and destitute creature of Thine be able to bear them? O' my God! My Lord! My King! And Master! Which of the matters shall I complain to Thee and for which of them shall I bewail and weep? shall I bewail for the pains and pangs of the punishment and their intensity or for the length of sufferings and their duration? Therefore (my Lord!) If Thou wilt subject me to the penalties (of hell) in company of Thy enemies and cast me with those who merited Thy punishments and tear me apart from Thy friends and those who will be near to Thee, then my God, my Lord and my Master, though I may patiently bear Thy punishments, how can I calmly accept being kept away from Thee? I reckon that though I may patiently endure the scorching fire of Thy hell, yet how can I resign myself to the denial of Thy pity and clemency? How can I remain in the fire while I have hopes of Thy forgiveness? O' my Lord! By Thy honour truly do I swear that, if Thou wilt allow my power of speech to be retained by me in the hell, I shall amongst its inmates cry out bewailingly unto Thee like the cry of those who have faith in Thy kindness and compassion And I shall bemoan for Thee (for being deprived of nearness to Thee) the lamentation of those who are bereaved, and I shall keep on calling unto Thee: Where art Thou o' Friend of the believers! O' (Thou who art) the last hope and resort of those who acknowledge Thee and have faith in Thy clemency and kindness; o' Thou who art the helper of those seeking help! O' Thou who art dear to the hearts of those who truly believe in Thee! And o' Thou who art the Lord of the universe. My Lord! Glory and praise be to Thee, wouldst Thou (wish) to be seen (disregarding) the voice of a muslim bondman, incarcerated therein (the hell) for his disobedience and imprisoned within its pits for his evildoings and misdeeds, crying out to Thee the utterance of one who has faith in Thy mercy and calling out to Thee in the language of those who believe in Thy unity and seeking to approach Thee by means of Thy epithet the Creator, the Nourisher, the Accomplisher and the Protector of the entire existence? My Lord! Then how could he remain in torments when he hopefully relies upon Thy past forbearance, compassion and mercy? And how can the fire cause him suffering when he hopes for Thy grace and mercy and how can its roaring flames char him when Thou hearest his voice and sees his plight? And how can he withstand its roaring flames when Thou knowest his fraility? And how can he be tossed about between its layers when Thou knowest his sincerity? And how can the guards of hell threaten him when he calls out to Thee? My Lord, and how would Thou abandon him therein (the hell) when he has faith in Thy grace to set him free? Alas! That is not the concept (held by us) of Thee nor has Thy grace such a reputation nor does it resemble that which Thou hast awarded by Thy kindness and generosity to those who believe in Thy unity I definitely conclude that hadst Thou not ordained punishment for those who disbelieved in Thee, and hadst Thou not decreed Thy enemies to remain in hell, Thou wouldst have made the hell cold and peaceful and there would never have been an abode or place for any one in it; but sanctified be Thy Names, Thou hast sworn to fill the hell with the disbelievers from amongst the jinns and mankind together and to place forever Thy enemies therein And Thou, exalted be Thy praises, hadst made manifest, out of Thy generosity and kindness, that a believer is not like unto him who is an evil-liver. My Lord! My Master! I, therefore implore Thee by that power which Thou determineth and by the decree which Thou hast finalised and ordained whereby Thou hath prevailed upon whom Thou hast imposed it, to bestow upon me this night and this very hour the forgiveness for all the transgressions that I have been guilty of, for all the sins that I have committed, for all the loathsome acts that I have kept secret and for all the evils done by me, secretly or openly, in concealment or outwardly and for every evil action that Thou hast ordered the two noble scribes to confirm whom Thou hast appointed to record all my actions and to be witnesses over me along with the limbs of my body, whilst Thou observeth over me besides them and wast witness to those acts concealed from them? Which Thou in Thy mercy hast kept secret and through Thy kindness unexposed and I pray to Thee to make my share plentiful in all the good that Thou dost bestow; in all the favours that Thou dost grant; and in all the virtues that Thou dost allow to be known everywhere; and in all the sustenance and livelihood that Thou dost expand and in respect of all the sins that Thou dost forgive and the wrongs that Thou dost cover up O' Lord! O' Lord! O' Lord! O' my God! My Lord! My King! O' Master of my freedom! O' Thou who holdeth my destiny and who art aware of my suffering and poverty, O' Thou who knoweth my destitution and starvation, o' my Lord! O' Lord, o' Lord! I beseech Thee by Thy glory and Thy honour, by Thy supremely high attributes and by Thy names to cause me to utilise my time, day and night, in Thy remembrance, by engaging myself in serving Thee (Thy cause) and to let my deeds be such as to be acceptable to Thee, so much so that all my actions and offerings (prayers) may be transformed into one continuous and sustained effort and my life may take the form of constant and perpetual service to Thee O' my Master! O' Thou upon Whom I rely! O' Thou unto Whom I express my distress! O' my Lord! My Lord! My Lord! Strengthen my limbs for Thy service and sustain the strength of my hands to persevere in Thy service and bestow upon me the eagerness to fear Thee and constantly to serve Thee So that I may lead myself towards Thee in the field with the vanguards who are in the fore rank and be swift towards Thee among those who hasten towards Thee and urge eagerly to be near Thee and draw myself towards Thee like them who sincerely draw themselves towards Thee and to fear Thee like the fear of those who believe firmly in Thee and thus I may join the congregation of the faithful congregated near Thee (for protection) O' Allah! Whosoever intendeth evil against me, let ill befall on him and frustrate him who plots against me and assign for me a place in Thy presence with the best of Thy bondsmen and nearer abode to Thee, for verily that position cannot be attained except through Thy grace and treat me benevolently, and through Thy greatness extend Thy munificence towards me and through Thy mercy protect me and cause my tongue to accentuate Thy remembrance and my heart filled with Thy love and be liberal to me by Thy gracious response and cause my evils to appear fewer and forgive me my errors. For verily, Thou hast ordained for Thy bondsmen Thy worship and bidden them to supplicate unto Thee and hast assured them (of Thy) response So, my Lord! I look earnestly towards Thee and towards Thee, my Lord! I have stretched forth my hands therefore, by Thy honour, respond to my supplication and let me attain my wishes and, by Thy bounty, frustrate not my hopes and protect me from the evils of my enemies, from among the jinns and mankind o' Thou! Who readily pleased, forgive one who owns nothing but supplication for Thou doest what Thou willest o' Thou! Whose Name is the remedy (for all ills) and Whose remembrance is a sure cure for all ailments and obedience to Whom makes one self sufficient; have mercy on one whose only asset is hope and whose only armour is lamentation O' Thou! Who perfecteth all bounties and Who wardeth off all misfortunes! O' Light! Who illuminateth those who are in bewilderment! O' Omniscient! Who knoweth without (acquisition of) learning! Bless Mohammed and the Descendants of Mohammed and do unto me in accordance with that which befitteth Thee, and deal with me not in accordance to my worth May the blessings of Allah be bestowed upon His Apostle and the Rightful Imams from his Descendants and His peace be upon them plentifully

Transliteration

Bismilla Hir Rahma Nir Rahim Alla-Hooma Inni As'aloka Be-Rahmatekallati Vase'at Koolla Shai'in Wa Be-Qoo-vatekallati Qaharat Beha Koalla Shai'in Wa Khaza'a Laha Koalla Shai'in Wa Zalla Laha Kaalla Shai'in Wa Be-Jabaroatekal-lati Ghalabta Beha Koolla Shai'in Wa Be-'lzzatekal-Lati La Yaqaomo Laha Shai'oon Wa Be-'Azmatekal-Lati Mala.ta Koolla Shai' in Wa Be-Sooltanekal-lazi 'Ala Kaolla Shai'in Wa Be-Vaj-hekal-Baqi Ba'da Fanaa'e Koala Shai'in Wa Be-Asmaa'ekal-Iati Mala-at Arkana Kaalla Shai'in Be-Ilmekal-lazi Ahata Be-Kaolle Shai'inWo Be-Noore Vaj-hekal-Iazi Azaa'alahoo Kaalla Shai'in Ya Nooro Ya QooddoasoYa Av-valal-Av-valeena Ya Akhiral-Akhereena, Alla-Hoommaghfirle-yaz-zon-oobal-lati Tah-tekal-'Asam, Alla-Hoommaghfir-Leyaz-zonoobal-Iati Taghyyerool-Ne'ama. Alla-Hoommagh-firle-yaz-zonoobal-Lati Tahab-besad-doaa'a; Alla-Hoomaghfirle-yaz-zanaobal-lati Taqta' oor-Rajaa' a. Alla-Haomaghfirle-yaz-zonoobal-lati Tonaz-ze-Iooi-Balaa'a, Alla-Hoomaghfirli Koolla Zambin Az-nabto-hoo Wa Koolla Khati'atin Akh-ta-toha Alla-Hoonma Inni Ata-qarrabo Ilahika Be-Zikreka Vas-Tashfe'o Beka Ila Nafseka Wa As'aloka Be-Joodeka Wa Karameka An Tood-Neyani Min Qoorbeka Wa An Tooze'ani Shookraka Wa An Toolhemani Zikraka, Allo-Hoomma Inni As'aloka So'ala Khaze'im Mootazol-Iil Khashe'im-Matazar-re'in An Toosa Mehani Wa Tarhamani Wa Taj'alni Be-Qismeka Raziyan Qane'an Wa Fee Jami'il-Ahvale Mootavaze'an, Alla-Hooma Wa As'aloka So'ala Manish-taddat Faqatahoo Wa Al1zala Beka 'Indash-Shadaa'ede Hajatahoo Wa 'Azoma Feema 'Indaka Raghba-toho,Alla-Hoomma 'Azoma Sooltanoka Wa 'Ala-Makanoka Wa Khafe-ya Makroka Wa Zahara Amroka Wa Ghalaba Qahroka Wa Jarat Qoodratoka Wa La Yoomkenool Firaro Min Hookoomateka, Alla-Hooma La Ajido Le-Zanoobi Ghaferaon Wa La Le-qabaa'ehi Sateran Wa La Le-Shaim Min 'Amalil Qabeehin Bil-Hoosne Moobaddelan Ghairaka Laa Ilaha Illa Anta Soobhanaka Wa Be-Hamdeka Zalamto Nafsee Wa Tajarrato Bejahli Wa Sakanto Ila Qadeeme Zikreka Lee Wa Minneka 'Alyya, Alla-Hoomma Mavlaya Kam Min Qabeehe Satarataho Wa Kam Min Fadehim Minal-Balaa'e Aqaltahoo Wa Kam Min 'Isarin Wa Kam Mim Makroohin Daf'atahoo Wa Kam Min Sanaa'in Jameelil-Jasto Ahlal-lahoo Nashratahoo, AJla-Hooma 'Azma Balaa'ee Wa Afrata Bi Soo'o Hali Wa Qasorat Bi A'mali Wa Qa'adat Bi Aghlali Wa Habasani 'An Nafee Bo'do Amali Wa Khada 'Atanid-doonya Be-Ghorooreha Wa Nafsi Be-Kheyanateha Wa Matali Ya Syyedi Fa-As'aloka Be-Izzateka Al-Ia Yahjoba 'Anka Doaa'ee Soo'o 'Amali Wa Fe'ali Wa La Taf-zahni Be-Khafi-yo Mat-Tala'ta 'Alaihe Min Sirri Wa La Toajilni Bil-'Oqoobate 'Ala Ma 'Amiltohoo Fee Khalavati Min Soo'ay Faili Wa Isaa'a Wa Davame Tafreeti Wa Jahalati Wa Kasrate Shahvati Wa Ghafalati Wa Kin; AJJa-Hoomma Be-'lzzateka Lee Fil-Ahvaie Koolleha Ra'oofan Wa 'Alyya Fee Jamee'il-Omoore 'Atoofan Ilahi Wa Mavlaya Wa Rabbi Mal-Ii G hairoka As'aloka Kashafa Zorri Van-Nazara Fee Amree Ilahi Wa Mav- laya Ajvaita 'Alyya Hookma Nit-taba.to Feehe Hava Nafsi Wa Lam Ahtaris Faehe Min Taz'eene 'Adoo-vee Fagharrani Be-Maa Ahva Wa As'adaho 'Ala Zalekal- Qazaa'o Fatajavazta Be-Ma Jara 'Alyya Min Zaleka Ba'za Hodoodeka Wa Khalofto Ba'za Avamireka Falakal-Hamdo 'Alyya Fee Jamge'ay Zaleka Wa La Hoojjata Lee Feema Jara 'Alyya Feehe Qazaa'oka Wa Alzamani Hookmoka Wa Balaa'oka Wa Qad Ataitoka Ya Illahi Ba'da Taqseeri Wa Israfi 'Ala Nafsee Mo'tazeran Nademam Maonkaseram MoostaqeeJam Moostaghferam Moneebam Moqirram Mooz'enam Mo'tarefal-la Ajedo Mafarram Mimma Kana Minni Wa La Mafza'an Atavaj-jahoo Illahe Fee Amri Ghaira Qabooleka 'ozri Wa Idkhaleka Iyyaya Fee Sa'atim Mir-rahmateka. Alla-Hooma Faqbal 'Ozri Var-Ham Shiddata Zorri Wa Fokkani Min Shadde Va-Saqi Ya Rabbir-Ham Za'fa Badani Wa Riqqata Jildi Wa Diqqata 'Azmi Ya Mam Bada Khalqi Wa Zikri Wa Tarbeyati Wa Barri Wa Taghzeyati Habnj Lib-tedaa'ay Karameka Wa Salefe Barreka Bi Ya Ilahi Wa Svyedi Wa Rabbi Atoraka Mo'azzabi Be-Nareka Ba'da Tavheedeka Wa Ba'da Mantava 'Alajhe Qalbi Mim Ma'refateka Wa Laheja Behi Lesani Min Zikreka Va'taqGdahoo Zameeri Min Hoobeka Wa Ba'da Sidqe Nav-terafi Wa Do'aaee Khaze'an Le-Roboo-bi-vateka Haihata Anta Akramo Min An Tozvve'a Mar-Rab-baitahoo Av-to-ba-'ldda Man Adnaitahoo AV Tosharreda Man Avab-baitahoo Av Toosal-lema Ilal-Bala'av Man Kafai-tahoo Wa Rahimtahoo Wa Laita Shairri Ya Syvadi Wa Ilahi Wa Mavlaya Atosal-litoonnara 'Ala Vajoohin Kharraf Le'azamateka Sajedatan Wa 'Ala AI-sonin Nataqat Be- Tav-Heedeka Sadeqatan Wa Be-Shookreka Ma-dehatan Wa 'Ala Qoloobe Netarafat Be-Ilahi-yateka Mohaq-qeqatan Wa .Ala Zamaa'era Haval Minal 'lime Beka Hatta Sarat Khashe'atan Wa 'Ala Javareha Sa'at Ila Av-tane Ta'abbodeka Taa'e-atan Wa Asharat Be-lstigh-fareka Mooz'anetan Ma Hakazalzanno Beka Wa La Okhbirna Be-Fazleka 'Anka Ya Karimo Ya Rabbe Wa Anta Ta'lamo Za'fi 'An Qaleelim Mim Balaa'id-doonya Wa 'Oqoobateha Wa Ma Yajri Feeha Minal-Makarehe 'Ala Ahleha 'Ala Anna Zaleka Balaa'oom Maqroohon Qaleeloom-Maksohoo Yaseeroon Baqaa'ohoo Qaseeroon Mood-datohoo Fa-Kaifa Ehtemali Le-Balaa'il-Akhirate Wa Jaleele Wa Qoo'il- Makarahe Feeha Wa Hova Balaa 'oon Ta'toolo Mooddatohoo Wa Yadoomo Maqamahoo Wa La Yokhaf-fafo 'An Ahlehe Le-Annahoo La Yakoona Ilia 'An Ghazabeka Van-teqameka Wa Sakhateka Wa Haza Ma La Taqoomo Lahoos-samavato Val-Arzo Ya Syyedi Fa-Kaifa Bi Wa Ana 'Abdokaz-za.eefooz-zaleelool-Haqeerool-Miskee-nool-Moostakeeno, Ya Illahi Wa Rabbi Wa Syyedi Wa Mavlaya Le-Iyyil-Omoore I1aika Ashkoo Wa Lama Minha Azij-jo Wa Abkj Le-Aleemil 'Azabe Wa Shiddateh Av Le-toolil-Balaa.ay Wa Mood-datehi Fala'in Syyar-tani Fil-'Oqoobate Ma.a A.daa.eka Wa Jama'ta Bajni Wa Baina Ahle Balaa'eka Wa Farraqta Baini Wa Baina Ahib-baa'eka Fahbani, Ya Ilahi Wa Syyedi Wa Mavlaya Wa Rabbi Sabarto 'Ala 'Azabaka Fa-Kaifa Asbiro 'Ala Firaqeka Wa Habni Sabarto 'Ala Harrenareka Fa-Kaifa Asbiro 'Anin-nazare Ila Karamateka Am Kaifa skono Fin-nare Wa Rajaa'ee 'Afooka Fa-Be'lzzateka Ya Syyedi Wa Mavlaya Ooqsimo Sadeqal-Ia'in Taraktani Nateqal-Ia-Azze-janna Ilaika Baina Ahleha Zajeejal-Ameleena Wa La-asro khanna Ilaika Soorakhal-Moostasre-kheena Wa La-Abke-yanna 'Alaika Bookaa'al-Faqedeena Wa La 'Nade-yannaka Aina Koonta Ya Vali-yal Mo'meneena Ya Ghayate Amalil' Arefeena Ya Gheyasal-Moostaghee-seena Ya Habeeba Qoloobis-Sadeqeena Wa Ya Ilahal 'Alameena Afatoraka Soobhanaka Ya Ilahi Wa Be-Hamdeka Tasma'o Feeha Savta 'Abdim Mooslemin 'Soojena Feeha Be-Mokhalafatehi Wa Zaka Ta'ma 'Azabeha Be-Ma'si-yatehi Wa Hoobesa Baina Atmaqeha Be-Joprmehi Wa Jareerateha, Wa Hova Yoozij-jo Ilaika Zajeeja Mo'am-melin Le-Rehmateka Wa Yoonadeeka Be-Iesane Ahle Tavheedeka Wa Yatavas-salo Ilaika Be-Roboobi-yateka Ya Mavlaya Fa kaifa Yabqa Fil' Azabe Wa Hova Yarjoo Ma Salafa Hilmeka Wa Raf'ateka Wa Rahmateka Am Kaifa Too-Iemohoon-Naro Wa Hova Yamolo Fazlaka Wa Rahmateka Am Katfa Yoh-reqohoo Lahabooha Wa Anta Tasma'o Savtahoo Wa Tara Maka-nahop Am Kaifa Yashtamelo 'Alaihe Zafeeroha Wa Anta Ta'lamo Za'fahoo Am Kaifa Yata-gha1-ghelo Baina Atbaqeha Wa Anta Ta'lamo Sjdqahoo Am Kaifa Tazjo-rohoo Zabani-yatoha Wa Hova Yoonadeeka Ya Rabbahoo Am Kaifa Yarjoo Fazleka Fee 'Onoqehi Minha Fa-tat-rokohoo Feeha Haihata Ma Zalekazz-anno Beka Wa Lal-Ma'roofo Min Fazleka Wa La Mooshbehool-Lema 'Amalto Behil-Movahhedeena Mim Birreka Wa Ehsaneka Fa-bil-yaqeene Aqta'o Lav La Ma Hakamta Behi Min Ta'zeebe Jahedeeka Wa Qazaita Behi Min Ekhlade Mo'anedeeka Laja'altan Nahara Koollaha Bar-davn Wa Salamavn Wa Ma Kanat Le-Ahadin Feeha Maqar-ravn Wa La Meqamal-la-Kinnaka Taqaddasat Asmaa'oka Aqsamta An Tamla-aha Minal-Kafereena Minal-Jinnate Vannase Ajma'eena Wa An Tookhal-lido Feehal-Mo'anedeena Wa Anta Jalla Sanaa'oka Qoolta Moo-btade'an Wa Ta-tavvalta Bil-In.ame Mootakarreman Afaman Kana Mo'menan Kaman Kana Faseqal-La Yas-ta-oona Ilahi Wa Syyedi Fa-As'aloka Bil-Qoodratillati Qaddar- Taha Bil-Qazi-yatil-Iati Qaddar-Taha Wa Bil-Qazi-yatil-Iati Hatam-taha Wa Hakamtaha Wa Ghalabta Man 'Alaihe Ajraitaha An Tahaba Lee Fee Hazehil-Iai-Iate Wa Fee Hazehis-Sa'ate Koolla Joormin Ajramtohoo Wa Koolla Zambin Az-nab-tohoo Wa Koolla Qabeehin Asrar-tohoo Wa Koolla Jahlin 'Amil-tohoo Katam-tohoo Av A'lan-tohoo Akh-fal-tohoo Av Azhar-tohoo Wa Koolla Syye'atin Amarta Be-lsbaqehal-Kiramal-Katebeenal-lazeena Vak-kal-ta-hdom Be-Hifze Ma Yakoona Minni Wa Ja'alta-hoom Shohoodan 'Alyya Ma'a Javarehi Wa Koonta Antar-Raqeeba 'Alyya Min Varaa'ehim Vash-shaheda lema Khafe-ya 'An- hoom Wa Be-Rahmateka Akhfai-tahoo Wa Be-Fazleka Satar-tahoo Wa An Tavaffira Hazzi Min Koolle Khairin Toonzelohoo Av Ehsanin Toofzelohoo Av Birrin Tan- shorohoo Av Rizqin Basat-taho Av Zambin Taghferohoo Av Khata'in Tastorohoo, Ya Rabbe, Ya Rabbe Ya Rabbe Ya Ilahi Wa Syyedi Wa Mavlaya Wa Maleka Riqqi Ya Mam Be-Yadehi Nasi-yati Ya Aliman Be-Zorri Wa Maskalani Ya Khabiran Be-Faqri Wa Faqati, Ya Rabbe Ya Rabbe, Ya Rabbe As'aloka Be-Haqqeka Wa Qood-seka Wa A'zame Sifateka Wa Asmaa'eka An Taj'al Av-Qati Fil-Iaile Vau-Nahare Be-Zikreka Ma'mooratavn Wa Be-Khizmateka Mavsoo-latavn, Wa A'mali 'Indaks Maqboolatan- Hatta Takoona A'mali Wa Avradi Koollaha Virdavn Vahedan Wa Hali Fee Khid-mateka Sarmadan, Ya Syyedi, Ya Man 'Alaihe Mo'av-vali, Ya Man Ilaihe Shakavto Ahvali, Ya Rabbtl, Ya Rabbe, Ya Rabbe Qav-ve 'Ala Khid-mateka Javarehi Vash-dood 'Alal 'Azimate Javanehi Vahab Li-yal- jadde Fee Khash-yateka Vad-davame Fil-Itte-sale Be-Khid-mateka Hatta Asraha Ilaika Fee Maya-deenis-Sabeqeena Oosre'a Ilaika Fil Moobadereena Va3h-taqa lla aoorbeka Fil-Mooshtaqeena Wa Adnoova Minka Donov-val-Mookhleseena Wa Ahfaka Makhafatal-Mooqeneena Vaj-tama'a Fee Javareka Ma'al-Mo'meneena, Alla-Hoomma Wa Man Aradani Be-Soo'jn Fa-aridho Wa Man Kadani Fakjdha Vaj'alni Min Ahsane 'Ibadeka Naseeban 'Indaka Wa Aqra-Be-him Manzelatam Minka Wa Akhze-him Zaal-fatal-Iadajka Fa-Innahoo La-Yanalo Zaleka tlla Be-Fazleka Wa Jodani Be-Joodeka Va'tif 'Alyya Be-Maj-deka Vah-tizni Be-Rahmateka Vaj'al lasani Be-Zikreka Lahejan Wa Qalbi Be-Hoobbeka Mootamyyeman Wa Manna Be-Hoosne Ijabateka Wa Aqilni 'Asratj Vaghfirli Zallati Fa Innaka Fazaita 'Ala 'lbadeka Be-Ibadateka Wa Amarta-hoom Be-Doaa'eka Wa Zaminta lahomaal-Ijabata Fa-Ilaika Ya Rabbe Nasabta Vaj-heya Wa Ilaika Ya Rabbe Madad-to Yade-ya Fa-Be-'lzzatekas- Tajib lee Doaa'ee Wa Ballighni Moonaya Wa la Taq-Ta'Min Fazleka Rajaa'ee Ya Saree'oor-Reza Igh-fir lemal-La Yamlekood-doaa'a Fa-Innaka Fa.alool-lema Tashaa'o Ya Manis-mohoo Davaa'oon Wa Zikrohoa Shlfaa'aan Wa Ta'atohoo 'Ghenan Irham-Mar Rasa Malehir-Rajaa'o Wa Silaho-hool-Bookaa'o Ya Sabeghan-Ne'amay Ya Dafe'anneqamay Ya Nooral-Mastav-Heshgena Fiz-zolame Ya 'Alemal-la-Ya'lama Salle 'Alaa Mohammadin Wa Aale Mohammadin Vaf'al Bi Ma Anta Ahlohoo Wa Sal-Ial-Iaho 'Ala Rasoalehi Val-A'immatil Mayamgena Min Alehi Wa SalJam Tasleeman Kaseeran aseera: Allahaomma Sal1e Alaa Mohammadin Wa Aale Mahammad
https://www.youtube.com/watch?v=58C7efLec5M
Load More